خدا کا شکر ہے کہ زندگی میں آپ آئے
حیاتِ بے سکوں میں لمحے پُر ثبات آئے

 خدا کا خاص کرم تھا وہ آپ کا ملنا
سنیں جو آپ کو تو رُوح کو قرار آئے

جبیں سے زُلف کو پیچھے دھکیلتے رہنا
منظر مجھے نظر یہ بار بار آئے

 خدا نے چاہا تو پھرتجھ سے ہم ملیں گے ضرور
دعا ہے موت سے پہلے تو ایک بار آ ئے

تو اُٹھ کے اُس سے اے طؔلحہ کلام کر ہی لے
یہ نہ ہو صرف اداسی ترے نصیب آئے

۔۔۔۔۔

(طلحہ احمد)

Please follow and like us:

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *